Masarrat
Masarrat Urdu

اسوسی ایشن آف مسلم پروفیشنلس، کے روزگار میلے میں 1575 امیدواروں میں سے 265 امیدواروں کا جگہ پر انتخاب

Thumb

 

پونے 13 جولائی 2019
اسوسی ایشن آف مسلم پروفیشنلس، ورلڈ میمن آرگنائزیشن اور اور پونے ہلائی میمن جماعت کے اشتراک  سے ایک کامیاب روزگار میلے کا انعقاد آج پونے شہر میں کیا۔
بے روزگار نوجوانوں کو معروف تجارتی کمپنیوں میں روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے  لیے بلا تفریق مذہب و ملت اس روزگار میلے کا انعقاد اعظم کیمپس کے بیٹ منٹن کورٹ میں کیا گیا۔ اس کے ذریعے ذمہ داران نے  یہ کوشش کی کہ انہوں نے سماج سے جو حاصل کیا نوجوانوں کو روزگار کی صورت میں وہ سماج اور ملک کی تعمیر میں لوٹایا جائے۔

اس روزگار میلے کا افتتاح محترم سمیر شیخ (اسسٹنٹ کمشنر آف پولیس, کرائم) کے ہاتھوں ہوا محترم احسان گاڑا والا اور محترم عمران لاکھانی کے ہاتھوں  مہمانان کی گل پوشی کی گئی۔ 

محترم سمیر شیخ نے کہا کہ"مجھے یہ دیکھ کر بڑی خوشی ہو رہی ہے کہ کمیونٹی میں اس طرح کے تعمیری سرگرمیوں کی ابتدا ہوئی ہے جس کے ذریعے نوجوانوں کو اس میگا روزگار میلے کے ذریعے  روزگار فراہم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے انہوں نے اے ایم پی، ورلڈ میمن آرگنائزیشن اور پونے ہلائی میمن جماعت کی تعریف کی کہ انہوں نے وقت کی ضرورت کو پیش نظر رکھتے ہوئے نوجوانوں کو روزگار دلانے کی کوشش کی ہے۔ 
مختلف صنعتوں سے وابستہ کمپنیوں نے اس روزگار میلے میں شرکت کی۔ امیدواروں کی ایک کثیر تعداد تعداد تقریباً پندرہ سو پچھتر امیدواروں نے اس موقع سے استفادہ کیا بلآخر 265 امیدواروں کا جگہ پر انتخاب عمل میں آیا جبکہ 740 امیدواروں کو دوسرے راؤنڈ کے لیے لیے منتخب کیا گیا۔  
 محترم احسان گاڈا والا ( صدر ورلڈ میمن آرگنائزیشن انڈیا)  نے اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ اس روزگار میلے کا انعقاد  ملک کی تعمیر میں ہمارا ایک چھوٹا سا قدم ہے نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کے مواقع کے ذریعے ہم ملک کی ترقی میں اپنا رول ادا کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ آئندہ دنوں میں بھی ہم اے ایم پی کے ساتھ ملک کے مختلف علاقوں میں اس طرح کے روزگار میلوں کا انعقاد کرنے کے متمنی ہیں۔ 
محترم عامر ادریسی(صدر اسوسی ایشن آف مسلم پروفیشنل)  نے کہا کہ مجھے 6 مہینے بعد دوبارہ پونے آنے پر بڑی خوشی محسوس ہو رہی ہے۔ اے ایم پی کی یہ کوشش رہی ہے کہ وہ ملک کے نوجوانوں کو ان کی استطاعت اور تعلیمی قابلیت کے مطابق روزگار فراہم کرنے کی کوشش کرتی ہے مزید ورلڈ میمن آرگنائزیشن کے اشتراک سے ملک کے مختلف شہروں  میں ہم زیادہ سے زیادہ نو جوانوں کی مدد کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ 
محترم عمران لاکھانی( صدر پونے ہلائی میمن جماعت) نے کہا کہ مجھے بہت زیادہ خوشی ہے کہ اس روزگار میلے میں ہمیں اتنا زبردست رسپانس حاصل ہوا۔ پونے ہلائی میمن جماعت  اس اہم اور نیک مقصد کے لیے اپنا تعاون دینےپر بڑی خوشی محسوس کر رہی ہے اور یقینا اس اہم کام کے ذریعے ہم کمیونٹی اور سماج کو ترقی کی راہوں پر لے جائیں گے۔انشاءاللہ
محترم افتخار بڈکر(ہیڈ: اے ایم پی ایمپلائمنٹ اسسٹنٹ سیل) نےکہا کہ اے ایم پی کا مقصد  نوجوانوں کو روزگار کے ذریعے ملک کی معیشت میں میں اپنا تعاون دینا ہے۔گزشتہ سات برسوں میں اے ایم پی نے اب تک 35 سے بھی زائد میگا روزگار میلوں کا انعقاد کیا ہے جبکہ 250 سے زائد جاب ڈرائیوز منعقد کئے ہیں اور اس عرصے میں تقریبا 17 ہزار سے بھی زائد امیدواروں کو روزگار دلانے میں ہم کامیاب ہوئے ہیں۔ الحمدللہ۔
محترم امتیاز شیخ( سینئر اے ایم پی ممبر پونے) نے اس موقع پر کہا کے اے ایم پی اس بات کی بھرپور کوشش کر رہی ہے کہ وہ نوجوانوں کو شروعاتی اور درمیانی درجے کی نوکریاں دلانے کی کوشش کرے۔  ایک مرتبہ آپ نےنوجوانوں کو ان کی قابلیت کے مطابق جاب فراہم کردی تو انہیں مزید ترقی کرنے میں زیادہ مشکلات پیش نہیں آئیں گی اور ساتھ ہی ملک کی ترقی میں ہمارا بھی حصہ ہوگا۔ 
 اس روزگار میلے کی کامیابی اے ایم پی، ورلڈ میمن آرگنائزیشن اور پونے ہلائی میمن جماعت کے ممبران  اور کارکنان کی انتھک محنت کا نتیجہ تھی۔ بالخصوص محترم صہیب سیلیا ( جنرل سیکریٹری اے ایم پی) محترم رزاق شیخ (ہیڈ اے ایم پی پروجیکٹس) محترم جاوید سید (خازن اے ایم پی) شبیب احمد شیخ، محترم ارشد مرزا (سینیر ممبرز پونے اے ایم پی)، محترم جنید روگھاٹیا، محترم عالم قریشی،محترم سلیم بندوقیا( ورلڈ میمن آرگنائزیشن)، محترم ساجد نتھانی، محترم عظیم ویرانی، محترم عقیل وائےوالا، محترم محمد صوالح عمرانی اور دیگر تمام رضاکاران  اور ممبران نے اس روزگار میلے کو کامیاب بنانے میں اپنا تعاون دیا۔ 
اسوسی ایشن آف مسلم پروفیشنلس (اے ایم پی)  مسلم پروفیشنلس اور رضا کاروں کے لیے ایک ایسا پلیٹ فارم ہے جہاں وہ وہ اپنی معلومات، صلاحیت، تجربہ، مہارت نہ صرف مسلم کمیونٹی بلکہ بڑے پیمانے پر سماج کی ترقی کے لیے استعمال کرسکتے ہیں۔ اس کے ذریعے ہم بالخصوص مسلمانوں کی تعلیمی، سماجی، سیاسی اور معاشی زندگیوں میں استحکام لانے کی سعی کر رہے ہیں۔ اےایم پی سوسائیٹیز رجسٹریشن ایکٹ 1860 کے تحت ایک چیریٹیبل تنظیم کے طور پر رجسٹرڈ ہے جس کا اہم مقصد مختلف تعلیمی اور معاشی سرگرمیوں کے ذریعے  مسلم کمیونٹی کی ترقی ہے۔ 

Ads