Masarrat
Masarrat Urdu

ایسوسی ایشن آف مسلم پروفیشنلس (اے ایم پی) کی تاریخ ساز کامیابی ، کولکتہ اور نیلورمیں میگا جاب میلے

Thumb

 
سات سو پندرہ امیدواروں کو موقع پر ملازمت کا پروانہ جبکہ پچیس سو سے بھی زائد امیدواروں کو دوسرے راﺅنڈ کے لیے شارٹ لسٹ کیا گیا 
(کولکتہ / نیلور سنیچر 2 فروری 2019) : ایسو سی ایشن آف مسلم پروفیشنلس (اے ایم پی ) نے ایک ساتھ دو کامیاب میگا روزگار میلوں کا انعقاد نیلور (آندھرا پردیش ) اور کولکتہ (مغربی بنگال) میں ان کے متعلقہ ریاستی اقلیتی مالیاتی کارپوریشن کے اشتراک سے کیا۔ ان روزگار میلوں کا انعقاد پارک سرکس میدان، کولکتہ اور سرگودھا کالج ، نیلور میں کیا گیا۔ جس کا مقصد بیروزگار نوجوانوں کو معروف کمپنیوں میں ملازمت کے مواقع فراہم کرنا تھا ۔ کولکتہ میں منعقدہ روزگار میلا براہ راست مغربی بنگال اقلیتی مالیاتی ترقیاتی کارپوریشن کے اشتراک سے کیا گیا جبکہ نیلور میں یونائٹیڈ مسلم اقلیتی فیڈریشن (یو ایم ایف) کے اشتراک اور آندھراپردیش ریاستی اقلیتی مالیاتی کارپوریشن(اے پی ایس ایم ایف سی) و نیلور مونسپل کارپوریشن کے تعاون نے اس روزگار میلے کو کامیابی سے ہمکنار کیا۔ پچاسی سے بھی زیادہ کارپوریٹس اور انسانی وسائل کنسلٹنٹ جن کا تعلق مختلف صنعتوں سے تھا، نے اس روزگار میلے میں شرکت کی اور دس ہزار سے بھی زائد امیدواروں کو جانچنے پرکھنے اور ان کی اہلیت کا اندازہ لگانے کے بعد سات سو پندرہ سے زائد امیدواروں کو موقع پر ہی ملازمت دی گئی جبکہ پچیس سو سے زائد امیدواروں کو اگلے راو ¿نڈ کے لیے منتخب کیا گیا۔
ڈاکٹر پی بی سلیم (آئی اے ایس و چیئرمن اقلیتی کمیشن) نے کہا کہ اس طرح کے روزگار میلوں کا انعقاد ملک کی ترقی میں ہماری ایک چھوٹی سی کوشش ہے۔ بے روزگار نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کے ذریعے ہم سماج اور ملک کی ترقی میں مدد کرتے ہیں۔ ہمیں تقریباً آن لائن دس ہزار درخواستیں موصول ہوئیں۔ ہم اے ایم پی کے اشتراک سے کولکتہ کے بے روزگار نوجوانوں کے لیے اس روزگار میلے کا انعقاد کرکے خوشی محسوس کرتے ہیںکہ ہم نے انھیں روزری روزگار کے مواقع فراہم کیے۔ ہم مستقبل میں بھی اے ایم پی کے اشتراک سے اس طرح کے روزگار میلوں کا انعقاد کریں گے۔
محترم عبدالعزیز شیخ (مئیر نیلورمونسپل کارپوریشن) نے اس روزگار میلے کا افتتاح کیا اس موقع پر انہوں نے کہا کہ یہ ہمارے لئے فخر کی بات ہے کہ ہم نے اس روزگار میلے کا انعقاد کیا ہے لیکن اقلیتی اور غیر اقلیتی طلبہ کے لیے یہ کافی نہیں ہے ہماری اس کوشش کا مقصد یہ ہے کہ ہم سماج کے تمام طبقات کے نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے میں ان کی مدد کریں اس موقع پر ہم یونائیٹڈ مسلم فیڈریشن جنہوں نے ایسو سی ایشن آف مسلم پروفیشنلس کے اشتراک سے روزگار میلے کا انعقاد کیا انہیں بھی مبارکباد پیش کرتے ہیں کہ انہوں نے نہ صرف بے روزگار نوجوانوں کو روزگار دلانے میں مدد کی بلکہ ساتھ ہی ساتھ ملک و قوم کی ترقی کے اقدامات بھی کیے۔
محترم عامر ادریسی (صدر اے ایم پی) نے اس موقع پر کہا کہ موجودہ وقت میں حالانکہ روزگار کے مواقع اتنے روشن نہیں ہیں پھر بھی ہم نے یونائیٹڈ مسلم فیڈریشن سے اشتراک کر کے یہاں کے مقامی نوجوانوں کی مدد کرنے کا فیصلہ کیا۔ آپ نے مزید کہا کہ اگر آپ میں ٹیلنٹ اور اہلیت ہو توآپ کو یقینا ملازمت ملے گی۔ ہمیں امید ہے کہ یہ روزگار میلانیلور میں رہنے والے تمام نوجوانوں کے لیے ایک ایسا پلیٹ فارم ثابت ہوگا جس کے ذریعے وہ اپنی زندگی کو بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ ملک کی ترقی میں بھی اہم رول ادا کریں گے۔
محترم محمد رفیع شیخ ( ریاستی صدر یو ایم ایف)نے تمام مہمامان کا استقبال کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے روزگار میلوں کے انعقاد کرنا ایک ایسا قدم ہے جس کے ذریعہ ہم سماج اور بے روزگار نوجوانوں کی مدد کرسکتے ہیں جو آج کے اس مقابلہ جاتی دور میں روزگار یا نوکریاں تلاش کرنے کے لئے جدوجہد کر رہے ہیں ایک تنظیم کے طور پر ہم نے اے پی ایس ایم ایف سی سے رابطہ کیا کہ وہ ہماری اس کوشش میں مدد کریں جبکہ اے ایم پی کے تعاون اور اس کام میں ان کی مہارت نے اس روزگار میلے کو کامیاب بنایا۔ مزید ہم نے ذات پات اور مذہب سے بالاتر ہو کر نوجوانوں کو یہ موقع فراہم کیا کہ وہ اپنی صلاحیت اور قابلیت کی بنیاد پر معروف کمپنیوں میں ملازمت حاصل کر سکیں۔
محترم عبدالرزاق شیخ (ہیڈ -اے ایم پی پروجیکٹس)نے کہا کہ ہم یہ کوشش کرتے ہیں کہ نوجوانوں کو صحیح موقع فراہم کیا جائے اب تک اے ایم پی نے تیس سے بھی زائد میگا روزگار میلوں کا انعقاد کیا ہے جبکہ گزشتہ سات برسوں میں چھ سو سے زائد جاب ڈرائیوز کے ذریعے ہم نے پندرہ ہزار سے زائد امیدواروں کو ملک بھر میں اے ایم پی کے نوے حلقوں میں ملازمت فراہم کرنے کا کام کیا ہے ہمارا مقصد ہے کہ ہم ۹۱۰۲ءمیں تربیتِ مہارت کے ذریعے دس ہزار سے بھی زائد نوجوانوںکی تربیت کر سکیں اور پانچ ہزار سے زائد امیدواروں کو ملازمت فراہم کر سکیں۔
اس روزگار میلے کی کامیابی میں اے ایم پی کولکتہ اور حیدرآباد کی ٹیم نے سخت محنت کی۔ کولکتہ میں محترم محمد نقی(جنرل منیجر وی بی اقلیتی مالیاتی ترقیاتی کارپوریشن)، محترم منیر الزماں(او ایس ڈی)اور ان کی ٹیم نے اپنا بھرپور تعاون دیا۔ جبکہ نیلور میں محترم نارائین گارو(ای ڈی ، اے پی اقلیتی مالیاتی کارپوریشن) ، محترم شیخ عبدالقیوم (ریاستی اسکل ڈیویلپمنٹ کارپوریشن ) اور ان کی ٹیم نے روزگار میلے کو کامیاب بنانے میں اپنا بھرپور تعاون دیا۔ جبکہ اے ایم پی کی مرکزی ٹیم نے رہنمائی اور پس پشت تعاون فراہم کیا۔ 
ایسوسی ایشن آف مسلم پروفیشنلس (اے ایم پی) پیشہ ور مسلم نوجوانوں کے لیے ایک ایسا پلیٹ فارم ہے جو رضاکارانہ طور پر اپنے علم ، ذہانت ، صلاحیت اور تجربے کے مطابق کمیونٹی کی مدد کرسکتے ہیں اور بڑے پیمانے پر قوم کے تعلیمی، سماجی، سیاسی اور معاشی استحکام کے لئے کوشش کرسکتے ہیں اے ایم پی ”سوسائٹیز رجسٹریشن ایکٹ 1860“کے تحت ایک رجسٹرڈ سوسائٹی (ٹرسٹ) ہے اور اس کا اہم مقصد مسلم کمیونٹی کو تعلیمی اور معاشی سرگرمیوں کے ذریعے استحکام بخشنا ہے۔ 

Ads