Masarrat
Masarrat Urdu

تیسری مدت میں ہر بدعنوان کے خلاف کارروائی ہوگی: مودی

Thumb

رودرپور/نینی تال، 02 اپریل (مسرت ڈاٹ ک ام) وزیر اعظم نریندر مودی نے منگل کو بدعنوانوں کو واضح پیغام دیتے ہوئے کہا کہ تیسری میعاد میں بدعنوانی پر مزید سخت حملہ کیا جائے گا۔

رودر پور کے تاریخی مودی میدان سے انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر مودی نے کہا کہ مودی کی گارنٹی ہے کہ ہر بدعنوان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ غریب اور متوسط ​​طبقے کے حقوق کسی کو چھیننے نہیں دیں گے۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ ہر کرپٹ کو جیل جانا پڑے گا اور سزا ملے گی۔
وزیر اعظم نے کہا کہ دس سالوں میں ان کے دور میں جو کچھ ہوا ہے وہ صرف 'ٹیلر' ہے۔ ان کی حکومت تیسری مدت میں بڑے فیصلے کرے گی۔ انہوں نے عوام کو یقین دلایا کہ ابھی بہت کچھ کرنا باقی ہے۔ ابھی بڑے فیصلے ہونے باقی ہیں اور ملک کو بغیر رکے اور تھکے ہوئے بہت آگے لے جانا ہے۔
انہوں نے انڈیا گروپ اور کانگریس پر بھی سخت حملہ کیا اور اس اتحاد کو کرپٹ لوگوں کا اجتماع قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اپنی ایمرجنسی والی ذہنیت کے ساتھ دس سال اقتدار سے باہر رہنے کے بعد بوکھلا  گئی ہے اور ملک کو عدم استحکام کی طرف لے جا رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ کانگریس کے 'شہزادے' (مسٹر راہل گاندھی) عوام کو بھڑکانے کی کوشش کر رہے ہیں کہ اگر تیسری بار مودی حکومت آئی تو ملک میں آگ لگ جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ جمہوریت کی زبان نہیں ہو سکتی۔
انہوں نے مزید کہا کہ کانگریس کی خوشامد کی تاریخ رہی ہے۔ ملک کو ٹکڑے ٹکڑے کرنے کی بات کرنے والے کرناٹک لیڈر کو سزا دینے کے بجائے پارٹی نے انہیں انتخابات میں ٹکٹ دیا۔ اس سے صاف ہے کہ کانگریس کی ملک کو توڑنے کی تاریخ رہی ہے۔ انہوں نے ریاست کے لوگوں کو یاد دلایا کہ اسی کانگریس نے اتراکھنڈ کے فرزند اور تینوں فوجوں کے سربراہ وپن راوت کی بھی توہین کی ہے۔
وزیر اعظم نے یہ بھی کہا کہ کانگریس کی خوشامد کی تاریخ ہے اور اسی وجہ سے وہ شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) جیسے قوانین کی مخالفت کر رہی ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ کانگریس نے ملک کو تقسیم کیا ہے اور اس کے دور حکومت میں ملک کی سرحدیں محفوظ نہیں ہیں۔ انہوں نے یہ بھی الزام لگایا کہ گرو نانک دیو جی کی مقدس سرزمین کانگریس کے دور حکومت میں ہم سے چھینی گئی تھی۔ ان کی حکومت نے اب کرتار کوریڈور بنا کر عوام کو سہولت فراہم کی ہے۔

Ads