Masarrat
Masarrat Urdu

مہاریلی میں اٹھائیں گے ملک کے سنگین مسائل: کانگریس

Thumb

نئی دہلی، 30 مارچ (مسرت ڈاٹ کام) کانگریس نے کہا ہے کہ انڈیا گروپ کی اتوار کو ہونے والی مہا ریلی اہم ہوگی اور اس میں ملک کی اپوزیشن پارٹیاں ملک کو درپیش تمام اہم مسائل کو اٹھائیں گی۔

کانگریس کمیونیکیشن ڈپارٹمنٹ کے انچارج جے رام رمیش، دہلی کانگریس کے انچارج دیپک بابریا اور دہلی کانگریس صدر ارویندر سنگھ لولی نے آج یہاں ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ اتوار کو یہاں رام لیلا میدان میں ہونے والی مہا ریلی  ملک  کی جمہوریت اور  آئین کو بچانے کے لیے ہے۔ اس مہا  ریلی میں مودی حکومت کے خلاف بگل پھونکا جائے گا۔
انہوں نے کہا ’’تمام سیاسی جماعتیں کل کی ریلی میں شرکت کریں گی اور ان کے لیڈر ریلی سے خطاب کریں گے۔ یہ کوئی فرد پر مبنی  نہیں ’جمہوریت اور آئین بچاؤ‘ ریلی ہے، اسے ’جمہوریت بچاؤ ریلی‘ کا نام دیا گیا ہے۔‘‘
انہوں نے کہا کہ ’بڑھتی ہوئی قیمتیں، گزشتہ 45 سالوں میں سب سے زیادہ بے روزگاری کی شرح، معاشی عدم مساوات جس میں امیر امیر تر اور غریب غریب تر ہوتا جا رہا ہے جبکہ ترقی سے صرف چند ایک کو فائدہ ہو رہا ہے، معاشرہ پولرائزیشن اور کسانوں پر مظالم  ان میں سے ایک ہو ں گے۔‘‘
کانگریس جنرل سکریٹری نے کہا کہ مرکزی تفتیشی ایجنسیوں کا غلط استعمال کرکے اپوزیشن جماعتوں کو نشانہ بنانا بھی ایک اہم ایجنڈا ہوگا۔ انہوں نے کہا  “اپوزیشن کے دو وزرائے اعلیٰ اور کچھ وزراء کو بغیر کسی الزام کے گرفتار کیا گیا ہے جو کہ انتخابات کے وقت اپوزیشن جماعتوں کو مفلوج کرنے کی سازش ہے۔ یہ ریلی 75 سال کے سب سے بڑے گھپلے، الیکٹورل بانڈز کو بھی اجاگر کرے گی جس کے ذریعے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے 8200 کروڑ روپے اکٹھے کیے تھے۔
انہوں نے کہا کہ ان بانڈز کو سپریم کورٹ آف انڈیا نے غیر قانونی اور غیر آئینی قرار دیا تھا۔ بی جے پی نے بہت بڑا فنڈ اکٹھا کیا لیکن کانگریس پر ’ٹیکس دہشت حملہ‘ کیا۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ پارٹی کو باقاعدہ نوٹس دیے جا رہے ہیں کیونکہ کل شام ہی دو مزید نوٹس دیے گئے تھے۔
مسٹر رمیش نے کہا کہ یہ ریلی آئین اور جمہوریت کو بچانے کے لیے ہے، خاص طور پر بی جے پی اور آر ایس ایس کے رہنماؤں کے بار بار  اس دعووں کے تناظر میں کہ آئین کو تبدیل کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ اس کی میعاد ختم ہو چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر آئین میں تبدیلی کی گئی تو اس کے ساتھ سیکولرازم، سوشلزم اور سماجی انصاف بھی ختم ہو جائے گا کیونکہ سب کچھ خطرے میں پڑ جائے گا۔
انہوں نے کہا کہ یہ ریلی ملک کے عوام کی جانب سے لوک کلیان مارگ کو ایک مضبوط پیغام دے گی۔ ریلی میں کانگریس صدر ملکارجن کھڑگے، سابق صدر راہل گاندھی، این سی پی لیڈر شرد پوار، فاروق عبداللہ، محبوبہ مفتی، تیجسوی یادو، ادھو ٹھاکرے، اکھلیش یادو، چمپئی سورین، سیتارام یچوری، ڈی راجہ اور دیگر شرکت کریں گے۔

Ads